Skip to Content

Friday, November 24th, 2017

سی جی اے پی نے 10 ویںسال تصویری مقابلے کے فاتح کا اعلان کردیا

Be First!

واشنگٹن، 27 اکتوبر 2015ء/پی آرنیوزوائر/–

سی جی اے پی نے آج 2015ء تصویری مقابلے کے فاتح کا اعلان کردیا ہے جو بھارت کے سجن سرکار ہیں۔ جیتنے والی تصویر “دھان کی کاشت” کو اس کی حیران کن اور عمیق معیار کی وجہ سے 77 ممالک سے آنے والی 3,300 درخواستوں میں سے منتخب کیا گیا۔ تصویر کام کرنے والوں کو مغربی بنگال، بھارت میں دھان کے کھیت میں کام کرتے ہوئے دکھاتی ہے، جو مقابلے کے کلیدی موضوعات میں سے ایک کو تسخیر کرتی ہے ، چھوٹے کاشت کار اور ان کے اہل خانہ۔ تین ججوں کے پینل نے کہا کہ سرکار کی تصویر ظاہر کرتی ہے کہ خاندان کے ذریعہ معاش، گھر اور وہ خود کو کس طرح تقویت دیتے ہیں۔

انٹرایکٹو ملٹی میڈیا خبری اعلامیہ کا تجربہ یہاں اٹھائیں:

جیتنے والی 27 تصاویر کی مکمل گیلری اس آن لائن تصویری مضمون میں دیکھی جا سکتی ہیں۔

دنیا بھر میں دو ارب افراد ایسے ہیں جو باضابطہ مالیاتی خدمات تک رسائی نہیں رکھتے۔ گزشتہ دہائی میں سالانہ سی جی اے پی تصویری مقابلے نے مالیاتی نظام سے باہر موجود افراد کی جدوجہد اور کامیابی کو دستاویزی شکل دینے کی کوشش کی ہے۔ سی جی اے پی کی سی ای او گریٹا بل کہتی ہیں کہ “تصویری مقابلہ ہمارے لیے کام کرنے والے غریب افراد کو درپیش مسائل اور چیلنجز کا بہترین منظر پیش کرنا ممکن بناتا ہے۔ یہ مالیاتی شمولیت اور ہمارے کام کو ایک چہرہ عطا کرتاہے۔”

2015ء سی جی اے پی تصویری مقابلے نے چار کلیدی شعبوں میں تصویریں طلب کیں جو مالیاتی شمولیت کو بڑھانے میں ضروری ہیں: (1) ڈیجیٹل مالیاتی خدمات اور موبائل بینکاری؛ (2) عورتوں کی جانب سے مالیاتی خدمات کا استعمال؛ (3) چھوٹے کاروباری اداروں کے لیے مائیکروفنانس؛ اور (4) چھوٹے کاشت کار اور ان کے اہل خانہ۔

ججوں کا پینل واشنگٹن پوسٹ کے فوٹوگرافی بلاگ اِن سائٹ کے لیے فوٹو ایڈیٹر پینل نکول کراؤڈ،؛ ہیومن رائٹس واچ کی ایسوسی ایٹ ڈائریکٹر اور ایک اعزاز یافتہ فوٹوگرافر کورین دفکا؛ اور امریکن یونیورسٹی میں فوٹوگرافی پروگرام کی ڈائریکٹر اور ایسوسی ایٹ پروفیسر لینا جیسوال پر مشتمل تھا۔

ایک بہت کڑےعمل کے ذریعے ججوں نے دو دیگر حتمی امیدواروں، موضوعاتی اور علاقائی فاتحین، اور خصوصی انعام جیتنے والوں کا اعلان کیا۔ چین کے لمنگ کاؤ کی تصویر “جال کے ذریعے ماہی گیری” نے اپنی بہترین فریمنگ، بے مثل نزاکت اور تحریک پر ابھارنے پر دوسرا انعام جیتا۔ تیسرا انعام بھارت کے پرناب باسک کو ان کی تصویر “آزادی کے ہاتھ” پر ملا، جس پر ججوں نے اتفاق کیا کہ اس نے محبت کی روح کو قید کرلیا ہے – ایسی چیز جس کی “تصویر کشی مشکل ہے۔”

عوامی پسند کا ایوارڈ بھارت کے وکاش سنگھ کو گیا، جن کی تصویر “کاشت کار عورت” نے آن لائن 200 سے زیادہ ووٹ لیے۔

2015ء کے بڑے انعام کے فاتح کو فوٹوگرافی کا سامان خریدنے کے لیے 2 ہزار ڈالرز مالیت کا گفٹ سرٹیفکیٹ ملے گا اور ان کی تصویر نیو یارک شہر میں ٹائمز اسکوائر جمبوٹرون پر لگے گی۔

بڑے انعام کے فاتح اور حتمی امیدواران

  • بڑا انعام: دھان کی کاشت – سجن سرکار، بھارت
  • دوسرا انعام: جال کے ذریعے ماہی گیری – لمنگ کاؤ، چین
  • تیسرا انعام: آزادی کے ہاتھ – پرناب باسک، بھارت

موضوعاتی فاتحین

  • ڈیجیٹل مالیاتی خدمات اور موبائل بینکاری: خوش دکاندار – سبرتاادھکی کاری، بھارت
  • عورتوں کی جانب سے مالیاتی خدمات کا استعمال: تخلیق کار کی تخلیق – پرتھامیشونودگھڈیکر، انڈیا
  • چھوٹے کاروباری اداروں کے لیے مائیکروفنانس: ساری مکڑا – تاتیاناشیراپوا، روس
  • چھوٹے کاشت کار اور ان کے اہل خانہ: پہاڑوں میں کام – تاتیاناشیراپوا، روس

علاقائی فاتحین

  • خطہ مشرقی یورپ اور وسطی ایشیا: ٹماٹر – بلند سوبرک، ترکی
  • خطہ مشرقی ایشیا و بحر الکاہل: ریت کے ٹیلے کو مغلوب کرنا – لی منہ کوک، ویت نام
  • خطہ لاطینی امریکا و کیریبین: الیوتیریو حجام – ڈیوڈ مارٹن ہوامانی بدیو، پیرو
  • خطہ مشرق وسطیٰ و شمالی افریقہ : آنکھ کی تفصیل – ایونزکلیئراونتے، متحدہ عرب امارات
  • خطہ جنوبی ایشیا: ایک نو عمر ماں لکڑی کی گڑیاں بناتی ہوئی – گوتم دا، بھارت
  • خطہ نیم صحراوی افریقہ: فریدا کی مکئی کی فصل کٹائی – ہیلی ٹکر، امریکا

خصوصی انعام

  • پتھر پر کام کرنے والا – فیصل عظیم، بنگلہ دیش
  • جدوجہد کرتی ماں – گری وجایانتو، انڈونیشیا
  • صبح – ڈوہیولیم، ویت نام
  • صبح صبح چرانا – لیمنگ کاؤ، چین
  • اگلے سفر کے لیے – لوک مائی، ویت نام
  • آتش فشاں – لوئسسانچیزڈیویلا، اسپین
  • چھالیہ – ایم یوسف توشر، بنگلہ دیش
  • اونٹ مارکیٹ 2 – محمد کمال، مصر
  • کارکن – محمد رقیب الحسن، بنگلہ دیش
  • انسان جالی کھینچتے ہوئے – فوک نکوکوانگ، ویت نام
  • ایک چھوٹی دکان کھڑی – رانا پانڈے، بھارت
  • فولادی پسلیاں – سبھاسس سین، بھارت
  • ایک بوڑھی خاتون فوٹوگرافر – سپریا بسواس، بھارت
  • بطخ کے انڈوں کا ذخیرہ – تران وانتوئے، ویت نام

سی جی اے پی (کنسلٹیٹو گروپ ٹو اسسٹ دی پور) 34 معروف انجمنوں کی ایک عالمی شراکت داری ہے جو مالیاتی شمولیت کو بڑھانا چاہتی ہے۔ مزید کے لیے www.cgap.org۔

Previous
Next

Leave a Reply