Skip to Content

Thursday, November 15th, 2018

شرمین عبید چنائے نے ٹالبرگ فاؤنڈیشن کا ایلیاسن گلوبل لیڈرشپ انعام جیت لیا

Be First!
by October 18, 2018 General

چنائے یہ معروف اعزاز حاصل کرنے والی پہلی پاکستانی ہیں

نیو یارک، 17 اکتوبر 2018ء/پی آرنیوزوائر/– دو مرتبہ کی اکیڈمی ایوارڈ یافتہ فلم ساز، صحافی اور کارکن شرمین عبید-چنائے نے اپنی غیر معمولی قیادت اور دلیرانہ، امید پرستانہ محرّکات، آفاقی اقدار میں پیوست جڑیں رکھنے والے اور رسائی، تصوّر اور اثر انگیزی میں بنیادی طور پر عالمی کام کی بدولت معروف 2018ء ایلیاسن گلوبل لیڈرشپ اعزاز جیت لیا ہے، جس کا اعلان آج نیو یارک میں ٹالبرگ فاؤنڈیشن نے کیا۔ بلاشبہ، چنائے پہلی پاکستانی ہیں جنہوں نے یہ معروف اعزاز حاصل کیا۔

ایلیاسن گلوبل لیڈرشپ انعام جیتنے پر شرمین عبید-چنائے نے کہا کہ “مجھے ایک ایسے وقت پر ایلیاسن گلوبل لیڈرشپ انعام وصول کرتے ہوئے خوشی محسوس ہو رہی ہے جب معاشرے کو آئینہ دکھانے کی بھاری قیمت سامنے آ رہی ہے۔ اپنے ساتھیوں کو محض سچ بولنے پر دنیا بھر میں قید و بند کی صعوبتیں سہتے اور قتل ہوتا دیکھنے کے ساتھ، ہمیں ثابت قدم رہنے کی ہمت رکھنے کی ضرورت ہے۔ میں اس امید کے ساتھ مشکل داستانیں بیان کرتی رہوں گی کہ ان سے جو گفتگو شروع ہوگی وہ ہمارے دنیا کو دیکھنے کے زاویے کو تبدیل کرے گی۔”

ایلن سٹوگا، ٹالبرگ فاؤنڈیشن چیئرمین نے کہا کہ “یہ رہنما، کہیں مختلف تناظر میں کام کرتے ہوئے، اس سے یکساں وابستگی رکھتے ہیں: دنیا جیسی ہے اسے بہتر بنانا اور جیسا اسے ہونا چاہیے اس کے قریب لے جانا۔” انہوں نے گفتگو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ “مجموعی طور پر ہم اسے آج دنیا کو درکار قیادت کی اقسام کے بارے میں انتہائی مثبت اور طاقتور بیان سمجھتے ہیں ۔”

2005ء میں قائم ہونے والے اور 2014ء سے موجودہ صورت پانے والے ایلیاسن گلوبل لیڈرشپ انعام کے فاتحین بڑے پیمانے پر ایک آزادانہ، آن لائن عمل کے ذریعے نامزد ہوتے ہیں اور آخر میں افراد کی ایک جیوری سے منتخب ہوتے ہیں جو بذات خود مختلف ممالک اور شعبہ جات سے تعلق رکھنے والے تسلیم شدہ رہنما ہوتے ہیں۔ ایلیاسن انعامات اسٹاوروس نیارکوس فاؤنڈیشن (این ایس ایف) کی تائید کے حامل ہیں۔ 2018ء کے فاتحین میں شامل ہیں:

شرمین عبید-چنائے؛ اپنی داستان گوئی کی عالمی معیار کی مہارتوں کے لیے تاکہ عالمی حاضرین کی توجہ پسماندہ طبقوں کو متاثر کرنے والے ان مسائل پر مبذول ہو اور اذہان کو بدلے اور قانون سازی پر اثر ڈالے۔

رافیل یوستے؛ کولمبیا یونیورسٹی میں بایولوجیکل سائنسز کے پروفیسر، معروف نیوروسائنٹسٹ، یو ایس برین انیشی ایٹو (2013ء) کو متاثر کرنے والے اور اخلاقی حدود کے اندر جدید نیوروسائنس اور مصنوعی ذہانت پر تحقیق کے معروف حامی ہیں۔

امام عمر کوبائن لایاما، صدر سینٹرل افریقن اسلامک کمیونٹی؛ کارڈینل دیودوے نزاپالینگا، آرچ بشپ بانگوئی؛ اور نکولس گوریکویامے-گبانگو، صدر ایونجلیکل الائنس آف دی سینٹرل افریقن ری پبلک؛ پلیٹ فارم دے کنفیشنز ریلیجیسز دی سینٹرافریق (پی سی آر سی) کے بانیان جو ان کے ملک اور خطے میں پھیلنے والے تشدد کے دوران امن، مفاہمت اور سماجی وابستگی چاہتے ہیں۔ اس سال کے فاتحین کو 15 نومبر 2018ء کو میکسیکو سٹی میں انسٹیٹوٹو ٹیکنالوجیکو آٹونومو ڈی میکسیکو (آئی ٹی اے ایم) میں عوامی مکالمے میں اعزازات دیے جائیں گے۔ بلاشبہ فاتحین کا انتخاب 130 ممالک سے تعلق رکھنے والے اور درجنوں شعبہ جات، عہدوں اور مقاصد کے حامل 825 نامزدگان میں سے کیا گیا تھا۔ شرمین عبید-چنائے کا انتخاب کرتے ہوئے جیوری نے اپنی فلم سازی کے ذریعے اذہان کو تبدیل کرنے میں ان کی بڑھتی ہوئی ثابت قدم اور مؤثر قیادت کا ہی نہیں، بلکہ حقیقتوں کو تبدیل کرنے کے لیے کام کرنے کا بھی حوالہ دیا جو 21 ویں صدی میں ناقابل قبول ہونی چاہئیں۔

مزید معلومات کے لیے ملاحظہ کیجیے:

www.socfilms.com

http://www.facebook.com/socfilms

https://eliassongloballeadership.org/

ٹالبرگ فاؤنڈیشن کے بارے میں

ٹالبرگ فاؤنڈیشن، جس کے دفاتر اسٹاک ہوم اور نیو یارک میں واقع ہیں، لوگوں کو سوچنے پر اکسانے– اور یوں ان عالمی مسائل پر مختلف قدم اٹھانے کا ہدف رکھتی ہے جو ان کے حال اور مستقبل کی صورت گری کرتے ہیں۔ مزید معلومات کے لیے رابطہ کیجیے prize@tallbergfoundation.org ۔

www.tallbergfoundation.org ، www.eliassongloballeadership.org

اسٹاوروس نیارکوس فاؤنڈیشن (ایس این ایف) کے بارے میں

اسٹاوروس نیارکوس فاؤنڈیشن دنیا کی معروف نجی، بین الاقوامی انسان دوست انجمنوں میں سے ایک ہے جو فنون و ثقافت، تعلیم، صحت و کھیل اور سماجی بہبود کے شعبوں میں گرانٹس دیتی ہے۔ 1996ء سے فاؤنڈیشن دنیا بھر کے 124 ممالک کی غیر منافع انجمنوں کو 4,000 سے زائد گرانٹس کے لیے 2.6 ارب ڈالرز سے زيادہ سپرد کر چکی ہے۔

ایس این ایف دنیا بھر میں ایسی انجمنوں اور منصوبوں کو فنڈز دیتا ہے جو معاشرے کے لیے بڑے پیمانے پر وسیع، پائیدار اور مثبت اثر حاصل کرنا چاہتے ہیں، اور مضبوط قیادت اور مستحکم انتظامیہ کا مظاہرہ کرتے ہیں۔ فاؤنڈیشن ایسے منصوبوں کو بھی سہارا دیتی ہے جو سرکاری-نجی شراکت داری تشکیل دینے کو سہولت دیتے ہیں جو عوامی بہبود کی خدمات کے لیے ایک مؤثر طریقہ ہے۔

www.SNF.org

Previous
Next

Leave a Reply