Skip to Content

شینجن، پائلٹ ڈیمونسٹریشن زون کے طور پر، جی آئی پی سی میں سرمایہ کاری کی اعلی کشش کا مظاہرہ

Closed

شینجین، چین، 17 دسمبر 2021 /ژن ہوا-ایشیانیٹ/– 15 دسمبر کو منعقدہ 2021 شینجن گلوبل انویسٹمنٹ پروموشن کانفرنس (جی آئی پی سی) میں 260 سے زائد منصوبوں پر دستخط کیے گئے جن کی مجموعی سرمایہ کاری 820 ارب یوآن سے زائد تھی۔

منافع بخش نتائج برآمد ہوئے ہیں۔ شینجن نے علامتی طور پر جدت کے ساتھ پائلٹ ڈیمونسٹریشن زون کی تعمیر کو تیز کیا ہے جس سے اس وبا کے درمیان تاریک ہوتی عالمی معیشت کو اس قابل بنایا گیا ہے کہ چین اور شینجن میں سرمایہ کاری کی رفتار کو  محسوس کیا جاسکے۔

کانفرنس میں مختلف ہائی ٹیک اور بین الاقوامی عناصر مثلا لائیو اسٹریمنگ اور ایکسٹینڈڈ رئیلٹی (ایکس آر) ٹیکنالوجی کے علاوہ تکنیکی اور مستقبل کے احساس سے بھرپور ایک پروموشنل ویڈیو، دو لسانی میزبان، چینی، انگریزی، جرمن اور جاپانی زبان میں بیک وقت تشریح شامل تھی۔ جی آئی پی سی کی آرگنائزنگ کمیٹی کے مطابق اس کے آن لائن سرمایہ کاری کے فروغ دینے والے نمائشی ہالوں نے شینجن کے ہر ضلع کی جھلکیاں دکھاتے ہوئے ایک مربوط انٹرایکٹو تجربہ فراہم کیا تھا۔

جی آئی پی سی میں 15 دسمبر کو ہونے والی مرکزی تقریب سے قبل 5 براعظموں کے 12 شہروں میں ضلعی سطح کی سرمایہ کاری کے فروغ کی 12 تقریبات اور بیرون ملک تقریبات شامل تھیں جن میں سے آخر میں اے بی بی، میٹرو مال اور امریکن ایکسپریس سمیت 44 بڑے منصوبوں پر دستخط ہوئے۔

فارچون 500 کمپنی چین میں اے بی بی الیکٹرک ٹرانسپورٹیشن بزنس یونٹ کے سربراہ کاو یانگ کا خیال ہے کہ شینجن ڈیجیٹل ترقی کا بلند ترین شہر ہے اور اسمارٹ عمارتیں، الیکٹرک ٹرانسپورٹیشن بہت تیزی سے ترقی کر رہی ہیں۔ابھرتی ہوئی صنعتوں کی تیز رفتار ترقی مسلسل عالمی کاروباری اداروں کو سرمایہ کاری کی طرف لے جاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم دل کی گہرائیوں سے اس بات کو محسوس کرتے ہیں کہ شینجن سائنسی اور تکنیکی اختراعات کے شہر کے طور پر مکمل صنعتی سلسلہ اور صلاحیتوں کے ساتھ ساتھ پالیسیوں کی حمایت کے جامع فوائد کا حامل ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس سے اے بی بی کو شینجن میں اپنی سرمایہ کاری میں مزید اضافہ کرنے کے لئے مزید اعتماد حاصل ہوتا ہے۔ کانفرنس میں اے بی بی نے اپنا الیکٹرک ٹرانسپورٹیشن پروجیکٹ چین ہیڈ کوارٹر شینجن میں لگانے کا فیصلہ کیا۔

شینجن میونسپلٹی کے کامرس بیورو کے ڈپٹی ڈائریکٹر جیان ژینگ نے کہا ہے کہ شینجن میں ایئر بس اور سنوفی سمیت بہت سے مشہور فرانسیسی کاروباری اداروں نے بھی جڑیں پکڑ لی ہے اور وہ تبادلے کو مضبوط بنانے اور جیتنے والے تعاون کے منتظر ہیں۔

ایئر بس چائنا انوویشن سینٹر کے سربراہ سَن لُو نے کہا کہ یہ مرکز جس کا باضابطہ افتتاح 2019 میں شینجن میں کیا گیا تھا، دنیا بھر میں ایئر بس کے دو اختراعی مراکز میں سے ایک ہے۔”اس وبا کے باوجود مرکز نے شینجن میں مقامی سپلائرز کے ساتھ 100 سے زائد آرڈرز کے لیے تعاون کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم ہوابازی کی درخواستوں کی نئی مصنوعات فراہم کرنے کے لئے ٹینسینٹ، اپوٹرونکس کارپوریشن لمیٹڈ اور دیگر کاروباری اداروں کے ساتھ بھی تعاون کرتے ہیں۔

سرکاری اعداد و شمار سے ظاہر ہوتا ہے کہ رواں سال کے پہلے 10 مہینوں میں شینجن نے 20.99 ارب امریکی ڈالر سے زائد غیر ملکی معاہدوں پر مبنی سرمائے کو اپنی طرف متوجہ کیا ہے اور 8.8 ارب امریکی ڈالر حقیقی استعمال میں تھے، سال بہ سال نمو بالترتیب 19.8 فیصد اور 24.8 فیصد تک رہی جس سے مستحکم اور اچھا رجحان برقرار رہا۔

غیر ملکی سرمایہ کاری کے گرم مقامات سے دیکھا جاسکتا ہے کہ شینجن نے اسٹریٹجک ابھرتی ہوئی صنعتوں اور مستقبل کی صنعتوں کی ترقی کو تیز کیا ہے، عالمی اثر و رسوخ کے ساتھ سائنسی، تکنیکی اور صنعتی اختراعات کا ایک ہائی لینڈ تعمیر کیا ہے اور عالمی سرمایہ کاری کے لئے نئے مواقع لائے ہیں۔

شینجن کی قومی اقتصادی اور سماجی ترقی کے لئے 14 ویں پانچ سالہ منصوبے  (2021-2025) اور سال 2035 کے ذریعے طویل فاصلے کے مقاصد کے مطابق شینجن نے پہلی بار جی ڈی پی کے تناسب کے طور پر ڈیجیٹل معیشت میں بنیادی صنعتوں کی اضافی قدر کو شامل کیا ہے۔

ابھرتی ہوئی صنعتوں میں شینجن کا خاکہ بنیادی طور پر گزشتہ برسوں میں سائنسی اور تکنیکی اختراع میں ٹیکنالوجی کے ذخیرے پر انحصار کرتا ہے۔درحقیقت شینجن آپریشنل ڈیٹا سینٹرز، فائیو جی بیس اسٹیشنوں اور صنعتی پیمانے کی تعداد میں چین کی قیادت کرتا ہے۔ شینجن کی اختراعی قوت، جس کی نمائندگی ہواوے اور زیڈ ٹی ای کر رہے ہیں، شینجن کے لئے گریٹر بے ایریا میں ایک بین الاقوامی سائنس اور ٹیکنالوجی اختراعی مرکز کے طور پر خود کو تعمیر کرنے کے لئے ایک اہم انجن ہے۔ پائلٹ ڈیمونسٹریشن زون کی تعمیر کے عمل میں شینجن نے بین الاقوامی کاروباری ماحول کو مسلسل بہتر بنایا ہے اور دنیا بھر میں ہنرمندوں کو اپنی طرف راغب کیا ہے۔

شرکاء نے عام طور پر اس بات پر اتفاق کیا کہ شینجن، چین کی ریاستی کونسل کی جانب سے جاری کردہ کاروباری ماحول کو بہتر بنانے کے پہلے چھ پائلٹ شہروں میں سے ایک ہونے کے ناطے سرحد پار تجارتی سہولت کی سطح کو بہتر بنائے گا، غیر ملکی سرمایہ کاری اور بین الاقوامی ٹیلنٹ سروسز کے انتظام کو بہتر بنائے گا اور اعلی معیار کا عالمی معیار (ورلڈ کلاس) کاروباری ماحول بنانے پر توجہ مرکوز کرے گا جس سے شہر کی کشش میں مزید اضافہ ہوگا۔

چین میں یورپی یونین چیمبر آف کامرس کے جنوبی چین آفس برائے کامرس کے چیئرمین کلاؤس زینکیل نے کہا کہ میرے خیال میں عمومی طور پر شینجن کےلئے صورتحال اچھی ہے کیونکہ چین کے جنوبی حصے میں خاص طور پر جی بی اے میں ہمارے پاس کاروباری ماحول بہت اچھا ہے۔

شینجن، “شینجن اسپیشل اکنامک زون میں غیر ملکی سرمایہ کاری سے متعلق ضوابط” کے خصوصی اقتصادی زون کی قانون سازی کو بھی سرگرمی سے فروغ دے رہا ہے جس میں منفی فہرست کے انتظامی نظام کے ساتھ پری انٹری نیشنل ٹریٹمنٹ کو مکمل طور پر نافذ کرنے، بین الاقوامی قواعد کی تعمیل کرنے اور کھلنے کی سطح کو جامع طور پر بہتر بنانے کی تجویز پیش کی گئی ہے۔

ماخذ: جی آئی پی سی کی آرگنائزنگ کمیٹی

Previous
Next